Voice of Khyber Pakhtunkhwa
Thursday, December 1, 2022

خیبرپختونخوا کے 22 اضلاع میں ٹائیفائیڈ ویکسینیشن مہم کا آغاز

پشاور:خیبرپختونخوا کے 22 اضلاع کے شہری علاقوں میں ٹائیفائیڈ کنجوگیٹ ویکسینیشن مہم کا آغازصوبائی وزیر صحت و خزانہ تیمور سلیم خان جھگڑا نے ٹائیفائیڈ کنجوگیٹ ویکسینیشن مہم کاا پولیس انیڈ سروسز ہسپتال پشاور میں آج باقاعدہ افتتاح کیا۔افتاتحی تقریب میں وزیر صحت و خزانہ کی موجودگی میں بچوں کو ٹائیفائیڈ ویکسین لگائی گئی۔
اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز خیبرپختونخوا ڈاکٹر شاہین آفریدی، ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز ڈاکٹر شاہد یونس، ڈائریکٹر ای پی آئی ڈاکٹر محمد عارف خان، جنرل سیکریٹری پی۔پی۔اے ڈاکٹر باور شاہ، عالمی ادارہ صحت کے ڈاکٹر بابر عالم اور یونیسف کے صوبائی چیف عبداللہ ہی محمد یوسف بھی موجود تھے۔

ٹائیفائیڈ کنجوگیٹ ویکسینیشن مہم 3 اکتوبر سے 15 اکتوبر تک خیبرپختونخوا کے 22 اضلاع کے شہری علاقوں میں جاری رہی گی۔ اس مہم میں 9 ماہ سے 15 سال کے تقریباً 28 لاکھ بچوں کو ٹائیفائیڈ کنجوگیٹ کی ویکسین لگائے جائے گی۔
اس موقع پر صوبائی وزیر صحت و خزانہ تیمور سلیم خان جھگڑا نے کہا کہ صوبے کے ان اضلاع میں کمپین چلائی جارہی ہے جہاں ٹائیفائڈ کے کیسز میں اضافے کا خدشہ ہے۔
انہوں نے شراکت دار اداروں کا کمپین میں حکومت خیبرپختونخوا کا ساتھ دینے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ صحت کے عملے اور تمام شراکت دار اداروں کو کورونا سمیت دیگر ویکسینیشن کمپینز میں خدمات کی فراہمی پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔
انہوں نے خیبرپختونخوا حکومت کی محکمہ صحت کے ہنگامی صورتحال میں اوردیگر اقدامات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ سیلاب سے متاثرہ مراکز صحت صوبہ خود اپنے فنڈز سے بحال کرے گی۔ محکمہ صحت میں تیز تر ترقیاتی کام کیلئے زیادہ تر انتظامی اختیارات ہسپتال ایم ایس اور کمیٹیوں کو دے دیے گئے ہیں۔ ۔ سات مہینوں کے اندر صوبے کے 7 سو سے زائد مراکز صحت کی بحالی، فعالی اور تزئین و آرائش ہوچکی ہے۔ صحت کارڈ کیساتھ ساتھ اصلاحات کے نفاذ سے محکمہ صحت کی خدمات کی بجاوری میں بہتری لارہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ صحت اصلاحات میں اداروں کی تعاون کی ضرورت ہے۔
ڈائریکٹر ای پی آئی نے کہا کہ آج لنڈی ارباب میں سکول کے بچوں کو ٹائیفائیڈ ویکسینیشن مہم کے دوران کچھ بچے گھبراہٹ کا شکار ہو گئے تھے، جس کو فوراً نزدیک ہسپتال منتقل کیا گئے تھے اور ان کی حالت اب بالکل ٹھیک ہیں اور اپنے گھروں کو واپس جا چکے ہیں۔
ڈائریکٹر ای پی آئی خیبرپختونخوا ڈاکٹر عارف نے کہا کہ صوبے بھر میں مہم کامیابی سے جاری ہے۔ انہوں نے والدین سے درخواست کی ہے کہ اس مہم میں محکمہ صحت کا ساتھ دیں اور اپنے بچوں کو ٹائفائیڈ سے بچاؤ کا حفاظتی ٹیکہ ضرور لگوائیں۔
خیبر پختونخوا کے 22 اضلاع ایبٹ آباد، بنوں، چارسدہ، چترال پایان، ڈیرہ اسماعیل خان، دیر بالا، دیر پایان، ہنگو، کرک، کوہاٹ، کرم بالا، لکی مروت، مانسہرہ، مالاکنڈ، مردان، پشاور، سوات، صوابی، ہری پور، ٹانک اور خیبر میں ٹائیفائیڈ کے خلاف 12 روزہ ویکسینیشن مہم چلائی جائے گی۔

About the author

Leave a Comment

Add a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Shopping Basket